# OpenSubtitles2011/pl/2010/49115/3684820_1of1.xml.gz
# OpenSubtitles2011/ur/2010/49115/3845357_1of1.xml.gz


(trg)="1">

(trg)="2">

(trg)="3"> اردو ترجمہ از عین لام میم http : // 5thdarvesh . co . cc

(src)="1"> Dawno temu w odległej krainie powstało imperium , które rozciągało się od stepów Chin aż do brzegów Morza Śródziemnego .
(trg)="4"> بہت زمانے پہلے ، دور کہیں
(trg)="5"> ایک سلطنت تھی ، جو چین کی سرحدوں سے لیکر
(trg)="6"> بحیرہ احمر کے ساحلوں تک پھیلی ہوئی تھی ۔

(src)="2"> Tym imperium była Persja .
(trg)="7"> یہ تھی سلطنتِ فارس ۔

(src)="3"> Nieustraszona w bitwie , mądra w zwycięstwach .
(trg)="8"> جنگ میں بے خوف ، فتح میں دانشمند ،

(src)="4"> Tam gdzie wędrował Perski miecz , nastawał porządek .
(trg)="9"> جہاں کہیں بھی فارس کی تلوار جاتی ، قانون ساتھ جاتا ۔

(src)="5"> Perski król Sharaman rządził ze swym bratem Nizamem .
(trg)="10"> سلطان کا شہر نذاف
(trg)="11"> فارس کا بادشاہ ، شارامن

(src)="6"> Były to rządy lojalne i braterskie .
(trg)="12"> اپنے بھائی نظام کے ساتھ ملکر وفاداری اور بھائی چارے کے اصولوں پر حکومت کرتا تھا ۔

(src)="7"> Król miał dwóch synów dających mu wielką radość .
(trg)="13"> بادشاہ کے دو بیٹے تھے جس پہ وہ بہت خوش تھا ۔
(trg)="14"> جشن !

(src)="8"> Ale Bogowie uważali , że rodzina królewska nie jest jeszcze kompletna .
(trg)="15"> لیکن خداؤں کی نطر میں ، بادشاہ کا خاندان ابھی نا مکمل تھا ۔

(src)="9"> Przynajmniej do dnia , w którym król był świadkiem niezwykłej odwagi pewnej sieroty z ulicy .
(trg)="16"> حتیٰ کہ ایک دن بادشاہ نے ایک یتیم بچے
(trg)="17"> کی بہادری کا ایک واقعہ دیکھا ۔

(src)="10"> Z drogi !
(trg)="18"> راستے سے ہٹ جاؤ ! ۔
(trg)="19"> رکو ! ۔

(src)="11"> Przestań !

(src)="12"> Przestań !

(src)="13"> Zatrzymaj się !

(src)="14"> Uciekaj !

(src)="15"> Uciekaj !
(trg)="20"> بھاگو ! ۔

(src)="16"> Bis , uciekaj !
(trg)="21"> بھاگو ، بِس ، بھاگو ! ۔
(trg)="22"> یہاں رکو ۔

(src)="17"> Zostań tutaj .

(src)="18"> Puszczaj !
(trg)="23"> وہ بھاگ رہا ہے ! ۔
(trg)="24"> مجھے چھوڑ دو ! َ
(trg)="25"> بادشاہ کے نام پر ! ۔

(src)="19"> Pokłon przed Królem !

(src)="20"> - Jak się zwiesz , chłopcze ?
(src)="21"> - Dastan , panie .
(trg)="26"> ؂ تمہارا کیا نام ہے ، بچے ؟ ۔

(src)="22"> Gdzie twoi rodzice ? ... Chłopcze !
(trg)="27"> ؂ داستان ، حضور ۔ اور تمہارے والدین ؟ ۔
(trg)="28"> بچے ۔۔۔۔۔
(trg)="29"> بھائی ، اسے ساتھ لے لیں ۔

(src)="23"> Bracie !

(src)="24"> Zabierz go .

(src)="25"> Poruszony tym co zobaczył Król przygarnął młodego Dastana do swej rodziny .
(trg)="30"> اس واقعے سے متاثر پو کر بادشاہ نے اس لڑکے داستان کو اپنے خاندان میں شامل کر لیا ۔

(src)="26"> Stał się synem bez królewskiej krwi i prawa do tronu
(trg)="31"> ایک ایسا بیٹا ، جو شاہی خاندان کا نہ تھا ،
(trg)="32"> اور جس کی نظر اس کے تاج و تخت پہ نہ تھی ۔

(src)="27"> Być może stało się tamtego dnia coś innego ,
(trg)="33"> لیکن شاید اس دن کچھ غیر معمولی ہوا تھا ،

(src)="28"> Coś ponad ludzkim pojęciem .
(trg)="34"> کچھ ایسا جو سمجھ سے بالاتر تھا ،

(src)="29"> To dzień , w którym chłopiec z ulicy stał się Księciem Persji .
(trg)="35"> اس دن ، ایک لڑکا جس کا خاندان بھی مشکوک تھا ،
(trg)="36"> بن گیا تھا ،
(trg)="37"> فارس کا شہزادہ

(trg)="38"> سب ٹائیٹلز از عین لام میم http : // 5thdarvesh . co . cc

(trg)="39"> ١٥ سال بعد

(trg)="40"> فارس کی سرحد

(src)="30"> KSIĄŻĘ PERSJI :
(src)="31"> PIASKI CZASU
(trg)="41"> ’ الموت ‘ کا مقدس شہر

(src)="32"> Legendarne Alamut . !
(src)="33"> Bardziej zadziwiające niż myślałem .
(trg)="42"> کہانیوں کا شہر ’ الموت ‘ ، میری سوچ سے بھی زیادہ حیرت انگیز

(src)="34"> Niech cię nie zwiedzie jego piękno , książę .
(src)="35"> To miasto jak każde .
(trg)="43"> اس کی خوبصورتی سے دھوکہ مت کھائیے ، شہزادہ طاس باقی شہروں کی طرح یہ بھی ایک شہر ہی ہے ۔

(src)="36"> Słabe państwo to i słabi ludzie .
(src)="37"> Muszą zapłacić za swoją zdradę .
(trg)="44"> نرم ملک نرم مردوں کو جنم دیتے ہیں ۔ انہوں نے غداری کی ہے ، اور اب اس کی قیمت چکانی ہو گی ۔

(src)="38"> Ojciec wyraził się jasno .
(src)="39"> Miasto ma pozostać nietknięte .
(trg)="45"> والد محترم نے یہ واضح کیا تھا کہ ، الموت کو چُھوا بھی نہیں جائے گا ۔

(src)="40"> Niektórzy uważają je za święte .
(src)="41"> Pod nieobecność Ojca , to do mnie należy decydowanie .
(trg)="46"> کچھ لوگ اس کو مقدس مانتے ہیں ۔ لیکن چونکہ ہمارے والد بزرگوار یہاں موجود نہیں ہیں ،

(src)="42"> Naradzę się po raz ostatni z mym szlachetnym wujem i dwoma braćmi , zaufanym Garsivem i ...
(trg)="47"> فیصلہ میرے ہاتھ میں ہے ۔
(trg)="48"> میں اپنے محترم چچا اور دونوں بھائیوں سے
(trg)="49"> آخری مشورہ کرنا چاہوں گا ۔ قابل اعتماد گارسِیو اور ۔۔۔۔۔

(src)="43"> Gdzie jest Dastan ?
(trg)="50"> داستان کہاں ہے ؟ ۔

(src)="44"> Dawaj !
(src)="45"> Postawiłem na ciebie cały żołd !
(trg)="51"> چلو ! میں نے اپنی پورے مہینے کی تنخواہ اس پہ لگائی ہے ! ۔

(src)="46"> To żenujące . !
(trg)="52"> ؂ یہ تو ذلالت ہے ۔ ؂ تم خود کیوں نہیں کوشش کرتے ؟ ۔

(src)="47"> Może sam spróbujesz ? !
(trg)="53"> چلو اندر

(src)="48"> Bierz go !
(trg)="54"> بس اتنی ہی ہمت ہے ؟ ۔

(src)="49"> Tylko na tyle cię stać ? !

(src)="50"> Dastan !
(trg)="55"> شہزادہ داستان ! ۔

(src)="51"> Gdzie jest Książę Dastan !
(trg)="56"> شہزادہ داستان کہاں ہے ؟ ۔

(src)="52"> Dastana tu nie ma !
(trg)="57"> شہزادہ داستان یہاں نہیں ہے ۔

(src)="53"> Wasza wysokość , proszę .
(src)="54"> Książę TUS zwołał naradę wojenną .
(trg)="58"> عالم پناہ ! مہربانی فرمائیے ۔ شہزادہ طاس نے جنگی مشاورت کیلئے بلوایا ہے ۔

(src)="55"> Już idę .
(trg)="59"> میں آ رہا ہوں ۔

(src)="56"> Nasz najlepszy szpieg przechwycił karawanę wiozącą miecze do Alamut .
(trg)="60"> ہمارے بہترین جاسوس نے الموت سے روانہ ہوئے ایک کاروان کی خبر دی ۔

(src)="57"> Strzały o stalowych grotach ..
(trg)="61"> تلواریں ، بہترین بناوٹ کی
(trg)="62"> فولادی نوکدار تیر ۔

(src)="58"> Obietnica zapłaty od zarządcy Kosha dal Alamut
(trg)="63"> سردار کوش نے الموت کو معاوضے کا وعدہ کیا ہے ۔

(src)="59"> Oni sprzedają broń naszym wrogom , Dastanie .
(trg)="64"> داستان ، وہ ہمارے دشمنوں کو ہتھیار فروخت کر رہے ہیں ۔

(src)="60"> Taka strzała przebije każdą zbroję .
(trg)="65"> اسی طرح کا ایک تیر کوشکان میں میرے گھوڑے کی جان لے چکا ہے ۔

(src)="61"> Ulice Alamut spłyną za to krwią .
(trg)="66"> اس کیلئے الموت کی گلیوں میں خون بہے گا ۔

(src)="62"> Albo nasi żołnierze polegną pod jego murami .
(trg)="67"> یا ہمارے سپاہی اسکی دیواروں سے گریں گے ۔

(src)="63"> Nasze rozkazy nie mówiły nic o ataku na Alamut .
(trg)="68"> ہمیں کوشکان کو روکنے کا حکم ہے ، الموت پر حملے کا نہیں

(src)="64"> Mądre słowa , braciszku .
(src)="65"> Słowa nie zatrzymają naszych wrogów ,
(trg)="69"> ؂ دانائی کی باتیں ، چھوٹے بھائی ۔ ؂ صرف باتیں ہمارے دشمنوں کو روک نہیں سکیں گی ،

(src)="66"> Panie .
(trg)="70"> جب کہ ان کے پاس اس طرح کی عمدہ تلواریں ہوں گی ۔

(src)="67"> Nie kiedy te ostrza pójdą w ruch .

(src)="68"> Atakujemy o świcie .
(trg)="71"> ہم صبح سویرے حملہ کریں گے ۔

(src)="69"> Jeśli taka twoja wola , to pozwól mi iść przodem .
(trg)="72"> اچھا ، اگر یہی تمہارا فیصلہ ہے تو پہلے اندر مجھے جانے دو ۔

(src)="70"> - To działka Garsiva .
(src)="71"> - To ja jadę na czele Perskiej armii !
(trg)="73"> ؂ کوئی کچھ کہنا چاہتا ہے ۔ گارسیو ؟ ؂ میں فارس کی فوج کا سالار ہوں ! ۔

(src)="72"> Dastan prowadzi armię złożoną z gawiedzi !
(trg)="74"> اور داستان گلی کے غنڈوں کی فوج کا ! ۔

(src)="73"> Może nie mają dobrych manier , ale w walce się przydają .
(trg)="75"> شاید وہ آداب میں اتنے اچھے نہ ہوں ، لیکن لڑائی میں کوئی مقابل نہیں ان کا ۔

(src)="74"> Zaszczyt przelania pierwszej krwi powinien należeć do mnie .
(src)="75"> - Garsivie , znów trzymasz dłoń na mieczu ...
(src)="76"> - Jest tam , gdzie powinna być !
(trg)="76"> ؂ پہلے خون کا اعزاز مجھے ملنا چاہئے ۔ ؂ گارسیو ، ہاتھ پھر سے تمہاری تلوار پر ہے ۔

(src)="77"> Dość !
(src)="78"> Ah , moi bracia .
(trg)="77"> ؂ ادھر ہی ہونا چاہئے اسے ! ۔ - اوہ ، میرے بھائی ۔

(src)="79"> Zapaleńcy
(trg)="78"> ہمیشہ سے ضدی ۔

(src)="80"> Mówi się , że Księżniczka Alamut jest niesamowicie piękna .
(trg)="79"> کہا جاتا ہے کہ الموت کی شہزادی خوبصورتی میں بے مثال ہے ۔

(src)="81"> Pójdziemy do jej pałacu i sami się przekonamy .
(trg)="80"> ہم خود اس کے محل میں جا کر دیکھ لیں گے ۔

(src)="82"> Nie wątpię w twoją odwagę , Dastanie .
(src)="83"> Nie jesteś jeszcze na to gotów .
(trg)="81"> مجھے تمہاری بہادری پہ کوئی شک نہیں داستان ، لیکن تم اس کیلئے ابھی تیار نہیں ہو ۔

(src)="84"> Kawaleria Garsiva pojedzie przodem .
(trg)="82"> گارسیو کے گھڑ سوار پہلے جائیں گے ۔
(trg)="83"> شہزادی تہمینہ ، فارسی فوج ابھی آگے نہیں بڑھی ۔

(src)="85"> Księżniczko Tamino , Perska armia nie posuwa się do przodu .

(src)="86"> W ich wierze nie ma miejsca na prawdę inną , niż ta która należy do nich .
(trg)="84"> ان کے ایمان میں اپنے علاوہ کسی اور سچ کو قبول کرنا مشکل ہے ۔

(src)="87"> Myślę , że byłoby bezpieczniej , gdyby nie podchodziła Pani tak blisko .
(trg)="85"> شاید یہ زیادہ محفوظ ہو گا اگر آپ اتنا قریب نہ کھڑی رہیں ۔

(src)="88"> Niezależnie od ich wiary , ich łuki i celność nie są wystarczające .
(trg)="86"> ان کا ایمان جیسا بھی ہو ، لیکن ان کی کمانیں اتنی مضبوط نہیں ،
(trg)="87"> اور نہ ہی ان کا نشانہ ۔

(src)="89"> Zwołaj radę !
(trg)="88"> مجلسِ شوریٰ کو جمع کیجئے ۔

(src)="90"> Powiedz im że będę w wysokiej świątyni .
(src)="91"> Muszę się pomodlić .
(trg)="89"> انہیں بتائیے کہ میں بلند معبد میں ہوں ، مجھے عبادت کرنی چائیے ۔

(src)="92"> Alamut jest niezdobyty przez tysiąc lat !
(trg)="90"> بلند معبد ؟ الموت میں ہزاروں سال سے کوئی داخل نہیں ہو سکا ہے ۔

(src)="93"> Wszystko zmienia się z czasem .
(trg)="91"> وقت کے ساتھ سب کچھ بدلتا ہے ۔

(src)="94"> Powinniśmy wiedzieć o tym najlepiej ze wszystkich .
(trg)="92"> ہمیں سب سے زیادہ اس بات کا ادراک ہونا چاہئے ۔
(trg)="93"> مجھے دوبارہ بتاؤ کہ ہم تمہارے بھائی کے حکم کی نا فرمانی کیوں کر رہے ہیں ؟ ۔

(src)="95"> Powiedz mi , czemu sprzeciwiamy się rozkazom twego Brata ?

(src)="96"> Bo Garsiv wie tylko jak atakować od frontu .
(src)="97"> To będzie masakra . obrońcy powinni być zajęci przy główniej bramie .
(trg)="94"> کیونکہ گارسیو سمجھتا ہے کہ حملہ سامنے سے کرنا چاہئے ، یہ قتلِ عام ہو گا ۔

(src)="98"> My wśliźniemy się boczną .
(trg)="95"> الموتی اس وقت مرکزی دروازے پہ مصروف ہوں گے ، اسلئے ہمیں پہلو میں نقب لگانی چاہئے ۔
(trg)="96"> کیا تم نے پی رکھی ہے ؟

(src)="99"> Piłeś coś ? !

(src)="100"> Tamtędy wejdziemy .
(src)="101"> Są dwie bramy .
(src)="102"> Zewnętrzna to prościzna .
(trg)="97"> یہ ہمارا طریقہ ہوگا ۔ یہاں دو دروازے ہیں ۔

(src)="103"> Ale wewnętrzna jest niemożliwa .
(trg)="98"> باہر والا آسان ہے ، اصل دروازہ اندر والا ہے جس سے گزرنا ناممکن ہے ۔

(src)="104"> Mechanizm jest strzeżony przez dwóch strażników .
(trg)="99"> اس پھاٹک کے نظام کی دو اہم برجیوں سے حفاظت کی جاتی ہے ۔

(src)="105"> Zawsze jest jakieś wyjście , Bis .
(src)="106"> Zajmiesz się zewnętrzną bramą , a ja zajmę się niemożliwym .
(trg)="100"> اندر جانے کا ہمیشہ کوئی نہ کوئی راستہ ضرور ہوتا ہے بِس ۔ تم بیرونی پھاٹک کا خیال رکھنا ۔

(src)="107"> Przez ciebie wszyscy zginiemy .
(trg)="101"> نا ممکن والا مجھ پہ چھوڑ دو ۔
(trg)="102"> اگر تم نے ہم سب کو مروا دیا تو گارسیو خوش نہیں ہو گا ۔

(src)="108"> Świetna przemowa , Bis .
(trg)="103"> اوہ ، عمدہ تقریر ، بِس ! ۔
(trg)="104"> پر جوش ! ۔

(src)="109"> Pokrzepiająca .

(src)="110"> Ogłosić alarm !
(trg)="105"> خطرے کا ناقوس بجاؤ ! ۔

(src)="111"> Przytrzymaj to .

(src)="112"> Zaczekaj .
(trg)="106"> اسے پکڑو ۔
(trg)="107"> اپنی کمر بچا کے ۔

(src)="113"> Uwaga na plecy !

(src)="114"> - Wschodnia brama otwarta !
(src)="115"> - To ludzie Dastana .
(trg)="108"> ؂ مشرقی دروازہ کھل گیا ہے ۔ ؂ یہ داستان کے آدمی ہیں ۔